90

وباکے دوران قربانی کامتبادل مالی صدقہ نہیں۔۔۔مفتی منیب الرحمٰن

وباکے دوران قربانی کامتبادل مالی صدقہ نہیں۔۔۔مفتی منیب الرحمٰن
مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین اور معروف عالم دین مفتی منیب الرحمٰٰن نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ حالات کو بنیادبناکر قربانی کی بجائے مالی صدقے کی بات قرآن وسنت کے خلاف ہے۔انہوں نے کہاکہ اس بات پراتفاق رائے ہوچکاہے کہ مویشی منڈیاں شہرسے باہرلگائی جائیں گی لیکن چاردیواری ضروری ہے نیز زیادہ سے زیادہ اجتماعی قربانی کی جائے۔اس کے علاوہ ایس او پیز پرعملدرآمدکرتے ہوئے قربانی کی کھالیں جلد ازجلد محفوظ مقامات تک پہنچائی جائیں‘ قربانی کی جگہوں پر صفائی اورجراثیم کش اسپرے کیاجائے نیز حکومت بیمارجانوروں کی منڈیوں میں آمد ی روک تھام کو یقینی بنائے اور گاہک اوربیوپاری ماسک کا استعمال کریں۔
ٍمفتی منیب الرحمٰن نے کہاکہ عوام اجتماعی قربانیوں کے لیے دینی تنظیموں اور مدارس کوترجیح دیں۔انہوں نے حکومت کے اسلام آبادمیں مندرکی تعمیر کے فیصلے پرکڑی تنقید کرتے ہوئے کہاکہ حکومت اپنے اس فیصلے کوفوری واپس لے۔اسلام کی ۰۵۴۱ء سالہ تاریخ میں ایک بھی مثال ایسی نہیں ملتی کہ اسلامی حکومت نے بت کدہ بنایاہو۔انہوں نے کہا کہ ٹھیک ہے ہم اقلیتوں کے حقوق تسلیم کرتے ہیں لیکن اقلیتیں اپنی آبادیوں میں اپنی عبادت گاہیں بناسکتی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں