جو ہوگیا سو ہوگیا، ہمیں اسٹیبلشمنٹ سے نہیں لڑنا چاہیے، شیخ رشید

لاہور: عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ جو ہو گیا سو ہو گیا، ہمیں اسٹیبلشمنٹ سے نہیں لڑنا چاہیے۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ سکیورٹی تب ملتی ہے جب 5 سیکرٹری بیٹھ کر فیصلہ کرتے ہیں۔ میں شریف فیملی کو تقسیم ہوتا دیکھ رہا ہوں۔ میں سمجھتا ہوں ہمیں اسٹبلشمنٹ سے نہیں لڑنا چاہیے۔

چیئرمین تحریک انصاف کے جلسے سے متعلق بات کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ علی پور میں عمران خان کا جلسہ تاریخی تھا۔ عمران خان نے بڑی محنت کی ہے۔ اگر انتخابات میں دھاندلی ہوئی تو عمران خان احتجاج کی کال دیں گے۔

اینٹی کرپشن کی انکوائری سے متعلق بات کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ جسے زمین بیچی اس کا چیک بھی باؤنس ہو گیا۔ مجھے نوٹس دیں میں حاضر ہوں۔ زمین میری ہے، میں بیچوں یا نہیں، تم مامے لگتے ہو؟۔ مجھے کوئی نوٹس نہیں ملا۔ کل میڈیا کو خبر دی گئی کہ اینٹی کرپشن نے مجھے بلایا ہے۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ سکیورٹی تب ملتی ہے جب 5 سیکرٹری بیٹھ کر فیصلہ کرتے ہیں۔ حکومت نے پریشانی کے عالم میں پرسوں میری سکیورٹی واپس لی۔حکومت کا دماغ کام نہیں کر رہا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں