ڈسکہ میں ناکے پر رکشا نہ رکنے پر پولیس کی فائرنگ سے مسافر خاتون جاں بحق

تھانہ صدر ڈسکہ کے علاقہ میں پٹرولنگ پولیس اہلکار کی فائرنگ سے خاتون جاں بحق ہوگئی۔

گوجرانوالہ کے علاقے کنگنی والا کی رہائشی 33 سالہ تنزیلہ گاؤں بناں میں شادی کی تقریب میں شرکت کے لیے رکشہ پر جارہی تھی جو پٹرولنگ پولیس کے اے ایس آئی کی گولی لگنے سے ہلاک ہو گئی۔

اے ایس آئی وقاص مسعود کے مطابق رکشہ ڈرائیور نے ناکے پر رکشہ نہ روکا جس پر اس نے سرکاری گن سے فائرنگ کی۔ تھانہ صدر ڈسکہ پولیس نے اے ایس آئی وقاص مسعود کو گرفتار کر کے حوالات میں بند کردیا۔ خاتون کے شوہر کی مدعیت میں اے ایس آئی وقاص مسعود کے خلاف تھانہ صدر ڈسکہ میں مقدمہ درج کرلیا گیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے پٹرولنگ ہائی وے پولیس کی فائرنگ سے خاتون کے جاں بحق ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے انسپکٹر جنرل پولیس سے رپورٹ طلب کرلی۔

عثمان بزدار نے کہا کہ گرفتار اے ایس آئی کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے، فائرنگ کرنے والے اے ایس آئی کے خلاف محکمانہ کارروائی بھی عمل میں لائی جائے، جاں بحق خاتون کے لواحقین کو ہر صورت انصاف فراہم کیا جائے، اے ایس آئی کی فائرنگ سے خاتون کے جاں بحق ہونے کا واقعہ انتہائی افسوسناک ہے، فائرنگ کرنے والا پولیس اہلکار سخت سزا کا مستحق ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں