سرخ لکیر کھینچ دی، کسی کو عبور کرنے کی اجازت نہیں، وزیر اطلاعات

اسلام آباد: وزیراطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ معیشت کی بحالی اور عوام کے ریلیف کے راستے میں ’سرخ لکیر‘ کھینچ دی ہے، کسی کو عبور کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

اپنے بیان میں وزیر اطلاعات نے کہا کہ لاہور میں پولیس اہلکار کمال احمد پر فائرنگ کرکے سُرخ لکیر پار کی گئی ہے، میڈیا سیاسی سرگرمیوں کی کوریج کرے لیکن شرپسندی، تشدد اور دہشت پھیلانے کی سرگرمیوں کا بائیکاٹ کرے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف معیشت اور عوام کی حفاظت کرنے کے دوٹوک ارادے کا اظہار کرچکے ہیں، پاکستان کی معیشت اور عوام کو بچانے کے لیے ’ریڈلائن‘ لگانے کا وقت آگیا ہے اور پاکستان کی معاشی خودمختاری کو بچانے کی جنگ میں کامیابی کے لیے سیاسی استحکام بنیادی ضرورت ہے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ پاکستان کو تباہ کرکے جانے والوں کو مزید تباہی پھیلانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی، معیشت اور عوام کی حفاظت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا کیونکہ معیشت جب بھی ’ٹیک آف‘ کرنے لگتی ہے تو عمران صاحب کی شرپسندی اس کے راستے کی رکاوٹ بنتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ سی پیک آیا، عظیم دوست صدر شی جن پنگ نے پاکستان آنے کا اعلان کیا تو دھرنے کا اعلان ہوگیا تھا لیکن آج پاکستان کی معیشت کی بحالی اور عوام کو ریلیف دینے کا آغاز کیا ہے تو کوئی مداخلت برداشت نہیں کی جائے گی، معیشت اور عوام کا ریلیف ایک نکاتی ایجنڈا ہے، اس پر کوئی سمجھوتہ ہوگا نہ اس پر حملہ برداشت کریں گے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ آج عوام کو بھی فیصلہ کرنا ہے کہ چوری فساد ٹولے کے ساتھ کھڑا ہونا ہے یا ملک کی تعمیر کے ساتھ، عوام کی ترجیح تعمیر، ترقی اور خوش حالی ہے۔

وزیر اطلاعات نے واضح کیا کہ ہر اقدام اِن شرپسندوں اور فسادیوں سے عوام کو بچانے کے لیے کیا جا رہا ہے، ملک میں معیشت کی بحالی، مہنگائی میں کمی اور روزگار شرارت کا سازش حائل نہیں ہونے دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں