کافی پینے سے ہاضمہ بھی درست رہتا ہے!

پیرس: فرانس میں ایک نئی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ کافی پینے سے جہاں دل اور دماغ کو فائدہ پہنچتا ہے، وہیں پیٹ اور ہاضمے کا نظام بھی بہتر رہتا ہے۔

واضح رہے کہ یہ ایک تجزیاتی مطالعہ (ریویو اسٹڈی) تھا جس میں کافی کے استعمال سے متعلق اب تک کی گئی 194 تحقیقات کا جائزہ لیا گیا۔

اس مطالعے سے معلوم ہوا کہ روزانہ 3 سے 5 کپ کافی پینے سے صحت پر کوئی منفی اثرات نہیں پڑتے جبکہ پیٹ کے مفید جرثوموں کی تعداد بڑھتی ہے جو ہاضمے پر بہت اچھا اثر ڈالتے ہیں۔

کافی پینے کے باعث قولون (آنت کے اختتامی حصے) میں حرکت بہتر ہوتی ہے اور یوں فضلے کا اخراج بھی بہتر ہوجاتا ہے۔ اس طرح کافی کی بدولت قبض میں 60 فیصد تک کمی آجاتی ہے۔

یہی نہیں بلکہ کافی پینے سے جگر کے سرطان کا خدشہ بھی کم رہ جاتا ہے جبکہ پِتّے میں پتھریاں بھی بہت کم بنتی ہیں۔

کافی کا تیسرا بڑا فائدہ یہ معلوم ہوا کہ اس سے لبلبے، پِتّے اور معدے سے اُن رطوبتوں (جوسز) کا اخراج بڑھ جاتا ہے جو ہاضمہ بہتر بناتی ہیں؛ اور یوں دوسری غذاؤں کے ہضم ہونے میں بھی سہولت پیدا کرتی ہیں۔

نوٹ: یہ مطالعہ ریسرچ جرنل ’نیوٹریئنٹس‘ کے تازہ شمارے میں آن لائن شائع ہوا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں