کینیڈا میں اسلاموفوبیا کسی صورت برداشت نہیں، جسٹن ٹروڈو

اوٹاوا: وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے کہا کہ اسلاموفوبیا کسی بھی صورت قابل قبول نہیں اور ہمیں اس نفرت کا خاتمہ کرکے مسلمان بھائیوں کے لیے کینیڈا کو محفوظ ملک بنانا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق وزیراعظم جسٹن ٹروڈو کی ہدایت پر کیوبک کی ایک مسجد پر حملے میں 6 نمازیوں کی شہادتوں کی پانچویں برسی پر 29 جنوری کو ملک بھر میں قومی سانحے کے دن کے طور پر منایا گیا۔

29 جنوری کو منائے گئے اس دن میں مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا گیا اور وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے اسلاموفوبیا سے نمٹنے کے لیے ایک خصوصی نمائندے کی تقرری بھی کی۔

وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے اپنے بیان میں کہا کہ اسلاموفوبیا کسی بھی صورت قابل قبول نہیں ہے اور یہ حتمی بات ہے۔ ہمیں نفرت کا خاتمہ کرکے اپنے مسلمان بھائیوں کے لیے کینیڈا کو محفوظ ملک بنانا ہے۔

جسٹن ٹروڈو نے پانچ سال قبل کیوبک مسجد حملے کے دن کو قومی سانحہ طور پر منانے اور اسلاموفوبیا کے سدباب کے لیے ایک خصوصی نمائندے کی تقرری کو ملک میں نفرت اور عصبیت کے خاتمے کی پالیسی قرار دی۔

واضح رہے کہ 29 جنوری 2017 کو شہر کیوبک کی ایک مسجد میں 27 سالہ مسلح نوجوان نے اندھا دھند فائرنگ کرکے 6 نمازیوں کو شہید اور 6 کو زخمی کردیا تھا جس پر الیگزینڈر بسونے نامی ملزم کو عمر قید سنائی گئی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں