لتا منگیشکر کو دعاؤں کی ضرورت ہے، ڈاکٹرز

اسلام آباد: کورونا سے متاثر ہونے والی لیجنڈری گلوکارہ لتا منگیشکر کے ڈاکٹرز نے دعاؤں کی اپیل کردی۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق 92 سالہ لیجنڈری کلوگارہ گزشتہ ہفتے سے ممبئی کے بریچ کینڈی اسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں زیر علاج ہیں۔

ہفتے کے روز اُن کے معالج نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ لتا منگیشکر کی طبیعت میں کوئی بہتری نہیں اس لیے انہیں آئی سی یو میں ڈاکٹرز کی زیر نگرانی رکھا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم دیکھو اور انتظار کرو کی پالیسی پر عمل کرتے ہوئے اُن کی صحت یابی کے لیے دعا کررہے ہیں۔

ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ لتا منگیشکر کو کورونا کے ساتھ نمونیا کی تشخیص بھی ہوئی ہے، عمر اور صحت کی وجہ سے انہیں آئی سی یو میں رکھنا بہت ضروری ہے۔

پروفیسر ڈاکٹر صمدانی نے مداحوں سے بھی لتا منگیشکر کی صحت یابی کے لیے دعائیں کرنے کی اپیل کی۔

قبل ازیں جمعرات کے روز گلوکارہ کی بھانجی رچنا شاہ نے کہا تھا کہ ہماری دعائیں قبول ہوئیں کیونکہ لتا منگیشکر کی طبیعت پہلے سے بہتر اور مزید بہتری کی جانب گامزن ہے۔

واضح رہے کہ لتا منگیشکر کو 11 جنوری کو کورونا مثبت آنے اور طبیعت بگڑنے کے سبب ممبئی کے اسپتال منتقل کیا گیا تھا، جہاں ڈاکٹرز نے صحت کو دیکھتے ہوئے انہیں آئی سی یو میں داخل کرلیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں