کراچی میں 5 سالہ بچی کے قتل کیس میں گرفتار پڑوسی خواتین کا جسمانی ریمانڈ منظور

کراچی: جوڈیشل مجسٹریٹ غربی نے 3 روز قبل منگھوپیر کے علاقے جام گوٹھ میں جھاڑیوں سے 5 سالہ بچی کی لاش ملنے سے متعلق مقدمے میں ملزمان کو 3 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

کراچی کی عدالت میں مقدمے کی سماعت ہوئی جہاں پولیس نے گرفتار 2 خواتین ملزمہ کو عدالت میں پیش کیا۔

عدالت نے گرفتار ملزمان کو 3 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر تفتیشی افسر کو پیش رفت رپورٹ جمع کرانے کا حکم دیدیا۔

پولیس کے مطابق بچی کے قتل کے الزام میں پڑوس کی 2 خواتین کو گرفتار کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ مقتولہ بچی کے والد نے اپنی پڑوسیوں پر بچی کے قتل کا الزام لگایا تھا۔ گرفتار خواتین نے بتایا کہ بچی ان کے گھر کھیلنے آئی تھی۔ کھیلنے کے دوران بچی کا پیر پھسل گیا اور وہ پانی کے ٹینک میں گر کر ڈوب گئی۔ بچی کے پانی کے ٹینک میں گرکر ڈوب کر مرنے سے خوفزدہ ہوگئے تھے۔ بچی کی لاش کو خوف کے باٰعث جھاڑیوں میں پھینک آئے۔

واقعے کا مقدمہ بچی کے والد کی مدعیت میں منگھوپیر تھانے میں درج کیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں