ٹک ٹاک نے 60 لاکھ سے زائد پاکستانی صارفین کی ویڈیوز ڈیلیٹ کردیں

اسلام آباد / بیجنگ: مختصر ویڈیو شیئرنگ پلیٹ فارم ٹک ٹاک نے کمیونٹی گائیڈ لائنز کی خلاف ورزی پر 60 لاکھ سے زائد پاکستانی صارفین کی ویڈیوز ڈیلیٹ کردیں۔

ٹک ٹاک کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ یکم جولائی سے ستمبر 2021 کے آخر تک پاکستانی صارفین کی جانب سے 60 لاکھ 19 ہزار 754 ایسی ویڈیوز شیئر کی گئیں جو کمیونٹی گائیڈ لائن کی خلاف ورزی کررہی تھیں۔ کمپنی کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ دنیا بھر میں حذف کیں گئیں ویڈیوز کے اعتبار سے گزشتہ برس پاکستان چوتھے نمبر پر رہا۔

ٹک ٹاک کے مطابق یکم جولائی 2021 سے 30 ستمبر 2021 تک دنیا بھر کے صارفین کی 9 کروڑ 14 لاکھ 45 ہزار 802 ویڈیوز ڈیلیٹ کی گئیں تھیں جن میں 60 لاکھ 19 ہزار 754 پاکستانی صارفین کی شیئر کردہ ویڈیوز تھیں۔ کمپنی نے یہ بھی بتایا کہ ڈیلیٹ کی جانے والی ویڈیوز کی شرح پلیٹ فارم پر شیئر ہونے والے مواد کے مقابلے میں ایک فیصد ہیں۔

اعلامیے کے مطابق کمیونٹی گائیڈ لائنز کی خلاف ورزی پر 93فیصد ویڈیوز پوسٹنگ کے چوبیس گھنٹے کے اندر جبکہ 95 فیصد صارفین کے رپورٹ کرنے اور نشاندہی کے بعد ڈیلیٹ دی گئیں۔

ٹک ٹاک کے مطابق رواں سال امریکا کے شہر واشنگٹن ڈی سی، ڈبلن اور سنگا پور میں جدید ترین سائبر انسیڈنٹ مانیٹرنگ اینڈ انویسٹی گیٹنگ ریسپانس سینٹرز بھی قائم کیا جارہا ہے جس کی مدد سے پلیٹ فارم پر شیئر ہونے والے مواد پر نظر رکھنا اور کوالٹی کو برقرار رکھنا ممکن ہوسکے گا۔

واضح رہے کہ کمپنی کی جانب سے پلیٹ فارم کے استعمال اور غیر معیاری مواد کی روک تھام کے لیے کمیونٹی گائیڈ لائنز متعارف کرائی گئیں ہیں، جن کی خلاف ورزی کرنے پر صارف کی ویڈیو ڈیلیٹ اور پھر اکاؤنٹ بلاک کردیا جاتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں